اولیا کی عظمت کا بیان

0
68

 اولیاء اﷲ ہیں سر تا بپا 
نائب(۱) حضرت محمدﷺ مصطفی 
جو نہیں ملتی ریاضت سے وہ شے
 اولیاء اﷲ کی صحبت میں ہے
 اولیاء اﷲ کو جو پا گیا 
وہ خدا و مصطفی کو پا گیا 
جس (۲)نے بھی دیکھا ولی اﷲ کو
 اُس نے دیکھا بالیقیں اﷲ کو
 اے خوشا وہ دل کہ صورت آشنا 
جو ہو دنیا میں کسی درویش کا 
 کون ہے درویش، درویش خدا 
حق نگر ، حق بین و حق داں،حق نما 
جو خدا کی ذات میں دیوانہ ہے
اپنی ہستی سے بھی جو بیگانہ ہے 
جو محقق عارفِ باﷲ ہے
بے شک و شبہ فنا فی اﷲ ہے
جو حقیقت میں قلندر ہے جناب 
معرفت کا اک سمندر ہے جناب
 پردۂ الہام ہے جس کا پیام 
عالمِ لاہوت ہے جس کا مقام 
جس کا چہرہ عین وجہُ اﷲ ہے
جس کی ہستی نورِ الا اﷲ ہے 
جس کی صحبت میں گنہگار و شقی
 آکے ہو جاتے ہیں ابدال و ولی


(۱) العلماء ورثۃ الانبیاء(ابودائود،ترمذی ، ابن ماجہ،امام احمد،دارمی وغیرہ)علماانبیا کے وارث ہیں۔ ظاہرہے کہ گروہ اولیاسے زیادہ کوئی دوسرا گروہ معارف وحقائق شریعت سے واقف اور دعوت و اصلاح امت کا علم بردار نہیں ہے،کیوں کہ یہ جماعت قدس ، اسرار الٰہیہ کی محرم اور فیضان نبوت سے براہ راست و بالواسطہ استفادہ کرنے والی ہے۔ 

(۲) اولیاے کاملین حق کی آیات ہیں۔ کہا گیاہے کہ ولی وہ ہے جسے دیکھ کر خدا یاد آئے۔ حدیث پاک ہے خیارکم الذین اذا راوا ذکر اللّٰہ ’’تم میں اچھے وہ ہیں جنہیں دیکھ کر خدا یاد آئے۔‘‘(شعب الایمان، ۷/ ۴۹۴، حدیث:۱۱۱۰۰۸)

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here